Wahabi Movement Exposed By Their Own History Book


گھر کو آگ لگ گئی گھر کے چراغ سے

 

A very easy summary for english readers, in this book they are talking about the History of Makkah al Mukarama and during its chapters, some pages talk about Wahhabism, its foundation and its Rules. Further Important thing is that their all those rules upon the basis of which they called everyone polytheist (Mushrik) and bidaati (Innovator). They accepted all of those beliefs, thus you decide you would like to still follow the un-authentic, kizbi, and dajjali Wahhabism instead of Real and True Islam from 1400 years?

Now some questions from Salafi (Wahhabi) Sanatan dharma

GHAR KO AAG LAG GAYI GHAR KE CHARAGHON SE

Unicode Text:

اختتامِ دھرمِ نجدیت انکی اپنی کتاب سے

صفحہ 942؛ پوائنٹس

1۔اگرموصوف نے جس ماحول میں پرورش پائی تھی وہاں ہرسو مشرکانہ اور جاہلانہ رسومات کا دور دورہ تھا۔ تو یہ جواب دو نجدیوکہ تمہارے ہی لکھے کے مطابق سرزمین حجاز کے عیینہ میں یہ قرن الشیطان ابن وہاب پیدا ہوا۔ اب یہ بتاؤ حجاز اگر مشرک رہا تو 1400 سو سال سے اسلام کہا ں تھا؟اور قرون اولیٰ سے نجدی کی پیدائش تک کیا سب مسلمان مشرک تھے؟۔

دوسرا سوال یہ ہے کہ تمہارے ہی لکھے کے مطابق مسلمانوں کی ہلاکت خیز گمراہی کو دیکھ کر شیخ نے توحید ورسالت اور اصلاح عمل کی تبلیغی شروع کردی۔ ہمارا سوال ہے ، پیدا ہوتے ہی؟ او ہ میرا مطلب ہے کہ شیخ نے اپنی دعوت اپنے والد کی حیات میں کیوں شروع نہیں کی؟ اس کا سگا بھائی شیخ سلیمان بن عبدالوہاب بھی حنبلی عالم تھا تو کیا وہ بھی مشرک و جاہل تھا؟ اُس نے کیوں قبول نہ کیا اپنے قرن الشیطان بھائی کے باطل نظریات کو؟

سوال نمبر 3؛۔ عقیدہ میں تم نجدی لکھ رہے ہو کہ رسو ل اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا رتبہ اور مقام ساری مخلوق سے اعلیٰ اور افضل ہے۔ لیکن تمہارے اسی نجدی نے اپنی کتاب التوحید میں اور پھر اسکی ہی اندھی تقلید میں تمہارے بھائیوں  دیوبندیوں  نے اپنے پیر اسماعیل دہلوی کی کتاب تقویۃ (تفویۃ) الایمان میں ، صراط مستقیم میں اور دیگر کتابوں میں کیو ں لکھا ہے کہ ، نبی تک کو افضلیت حاصل نہیں، ان کا اتنا ہی احترام کرو کہ جتنا بڑے بھائی کا کرتے ہو، نیز ایک اور جگہ یہ بکواس بھی لکھی ہے کہ جیسے ہرگاؤں کا چودھری ہوتا ہے ویسے ہی مثال نبی کی ہے۔ معاذ اللہ۔ نیز یہ بھی لکھا ہے کہ نبی کے علم سے شیطان کا علم افضل ہے۔ ثم معاذ اللہ۔ تو یہ بتاؤ اے کذاب نجدیو، اے کذاب دیوبندیو، تمہاری کونسی کِل سیدھی؟

سوال4۔ اگر نبی صلی اللہ علیہ وسلم حیات ہیں تو پھر سنی صوفی مشرک کیسےاگر وہ یہی عقیدہ رکھیں؟یہاں تم نے یہ بھی چالاکی کی ہے کہ ایک لفظ (برزخی) لکھا ہے ، اور اردو میں شاید کوئی توجہ نہ دیتا ۔ سوال یہ ہے کہ قرآن تو کہتا ہے کہ انبیاء باقائدہ جسمانی حیات ہیں اپنی قبور میں۔ قرآن میں کسی برزخی کا ذکر نہیں آیا۔ نیز قرآن شہید کو زندہ کہتا ہے اور اس کو رزق دیئے جانے کا بھی فرماتا ہے۔ یہ فرمانِ الٰہیہ ہے ، رزق اسی کو دیا جاتا ہے جو زندہ ہو برزخ میں تو عام ارواح ہوتی ہیں تم نے کتنی بے غیرتی کے ساتھ اور قرن الشیطان ابلیسیت کے ساتھ قرآن اور سلف کے قول کو لفظ (برزخی) کہہ کر مکاری کے ساتھ اپنا عقیدہ ہم اہلسنت کے ساتھ نتھی کرنے کی مذموم کوشش کی ہے۔ تف ہے تمہاری ابلیسیت پر۔

سوال؛ 5 ؛ پھر تم نے لکھا کہ آپ سلام پیش کرنے والے کا سلام سنتے ہیں تو پھر دوردوسلام کی محفل جوہم اہلسنت صوفی جنکو بریلوی نام دیا ہے تم نے وہ کرتے ہیں تو یہ شرک بدعت کیسے؟

سوال 6۔ جب نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی قبر اطہر(جسکو تم روضۃالمبارکہ) بھی لکھ سکتے تھے لیکن بہرحال، جب زیارت تم نے جائز کردی تو پھر زیارتِ قبور پر ابن تیمیہ اور اسی ابن وہاب نے رد کرنے کے لیے اس کو کفر شرک بدعت قرار دینے کے لیے اور پھر اسی کی بنیاد پر قتل و غارت جائز کرنے کی اجازتیں کیوں دیں؟

سوال7۔ جب درود شریف کی برکت سے رنج والم اور پریشانیوں سے نجات مل سکتی ہے تو پھر اے نجدیوں الصلوٰۃ والسلام علیک یا رسول اللہ پر ہم سنی بریلوی صوفی مشرک کیسے؟ اور درود کی (مدد) یعنی دوسرے الفاظ میں درود پڑھ کر نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی مدد اور وسیلے سے رنج و الم سے نجات پانا کیا غیراللہ سےمدد کے زمرے میں نہیں آتا؟یہ تو تمہارے اسی تقیہ پرست ابن وہاب نے خود شرک لکھا ہے۔

سوال 8۔ اولیاء کے بارے میں جو تم نے لکھا وہی تو ہم بریلوی سنیوں کا عقیدہ ہے پاکستان ہندوستان میں اور دیگر جگہوں پر دیگر اہلسنت کے گروپس اور صوفیاء کا بھی یہی عقیدہ ہے۔ کوئی بھی مسلمان کسی ولی کو اللہ نہیں کہتا، نہ ہی اسکو اللہ کی صفات دیتا ہے نہ اس کی عبادت کرتا ہے نا ہی اُس کو پوجتا ہے پھر ہم مشرک کیسے اور تم لوگوں نے پھر کس قانون کے تحت جنت البقیع کے مزارات کو شہید کیا؟ یعنی تم جھوٹے اور خائن ہو کیونکہ تم یا تو تمام مسلمانوں کو کافر سمجھتے ہو اور تم نے رافضیوں کی طرح تقیہ کیا ہے کہ تم لوگ کسی مسلمان کے خلاف نہیں نہ ہی قتل کرتے ہو لیکن ساڑھے چار ہزار مسلمانوں کو ہی تم نے قتل کیا تھا۔ اور یا۔ تم اب اپنا ڈالاہوا گند ان کتابوں کے ذریعے دھونا چاہ رہے ہو۔ دونوں صورتوں میں تم کذاب ہو اور کذاب کی کسی بھی بات کا اعتبار کیوں کریں ، مذہب میں کذب کرنا سب سے بڑا گناہ کبیرہ ہے۔

9۔ تم نےلکھا کہ قیامت کے دن شفیع المذنبین ۔۔۔۔۔۔اور ہم اللہ تعالیٰ سے اس شفاعت کے طلب گار ہیں۔ واہ کیا مکاری ہے کیا کہنے ابلیسیو فرمیسن وہابیو واہ۔ یعنی شفاعت کبریٰ کا تو اقرار ادھورا کرلیا لیکن شفاعت عمومی کا انکار بھی کردیا۔ اس بات پر بھی پردہ ڈال دیا ۔قیامت میں تو تم سرکار سے مدد مانگو گے ہی لیکن ان کی جو عمومی شفاعت ہے اس کے بارے میں کیوں کچھ نہیں لکھا؟ ۔۔دوسری چالاکی یہ دکھائی کہ (اور ہم اللہ تعالیٰ سے اس شفاعت کے طلبگار ہیں) یعنی بجائے یہ درخواست بارگاہِ رسالت میں پیش کرنے کے جسکا ثبوت قرآن کی سورۃ النساء آیت 46 ہے تم لوگوں نے یہاں بھی نبی صلی اللہ علیہ وسلم کو بائی پاس کرکے ڈائریکٹ یہ لکھا کہ اللہ سے مانگتے ہیں۔ ابے ابلیس کی اولادو! اللہ کہہ رہا ہے کہ مصطفیٰ سے مانگو وہ دیں تو لے لو، وہ نہ دیں تو مان جاؤ، تم خبیث کے بچے پھر اپنی مرغی کی ایک ہی ٹانگ اٹھائے اپنی ابلیسی (اکبر کے دین الٰہی) کی وہابیت پرست توحید کی جھنڈی گھما رہے ہو۔

سوال نمبر دس : ہن ایہہ دَس کیہہ:

تم نے لکھا ہم اسی طرح اولیاء کرام اور فرشتوں کی شفاعت کے لیئے بھی اللہ تعالیٰ سے عرض کرتے ہیں۔ سوال پیدا ہوتا ہے انّی دیئو! یہ بتاؤ ۔ یہ کیا اصول ہے کہ تم اللہ سے کہہ رہے ہو کہ وہ تمہیں اجازت دے کہ اُسکی مخلوق کی سفارش پیش کرسکو؟ ہا ہا ہاہا۔ یعنی یہ تو تمہارے اپنے ہی اصول و دھرم کے مطابق عجیب بیوقوفانہ شرک ہوا۔ کیونکہ تمہارے عقیدوں کے مطابق اللہ کے ہاں کسی کی سفارش پیش نہیں کی جاسکتی، اور جو سفارش پیش کی جائے گی وہ بھی اللہ ہی اجازت دے گا، جبکہ اللہ ہی نے فرمایا کہ مجھ تک آنا ہے تو میرے محبوب کی مدد حاصل کرو۔ ڈائریکٹ کوئی راستہ نہیں۔ یہ کیا تم لوگوں نے گھمن پھیری ٹائپ دھرم شروع کررکھا ہے۔ اللہ کی وہ بات مانتےہو جو تمہارے خیال سے صحیح میچ کرے اور جو حکم وہ دیتا ہے جو تمہارے خلاف جائے اسکو گھما پھرا دیتےہو خبیثو۔

سوال 11۔ پھر تم نے یہ بھی لکھا ہے کہ ہمارا مسلک حنبلی ہے۔ لیکن ہم چاروں فقہی مسالک کو حق مانتے ہیں۔ اب سوال یہ ہے کہ جب ہم سب حق ہے اور ہم سب متفقہ طور پر تم کو غلط کہتےہیں تو پھر ؟۔ اجماع امت کے خلاف جانے والا کون ہوتاہے؟ نیز جب سب مسالک حق ہے تو پھر برصغیر پاک وہند کی ناجائز وہابی دیوبندی نسل کیوں ہم سنیوں صوفیوں اور حنفیوں پر بھونکتی ہے؟ کفر شرک بدعت کے فتوے کس قانون کے تحت دیتےرہے ہو؟

پھر صفحہ 251 پر جو تم نے بکواس لکھی ہے کیا کوئی بھی پاک و ہند کا رہنے والا اس کو مان سکتا ہے؟ یا حتی کہ اس بات کو کہ تم لوگ کسی بھی مسلمان کی تکفیر نہیں کرتے۔ کتنے تمہارے فتوئے دکھائیں تم لوگوں کو؟تمہاری نسبت جو باتیں بھی منسوب ہیں وہ عوام کو معلوم ہیں ہم انی دے پُت نہیں یا ہم نئے نئے دنیا میں نہیں آئے کہ ہم کو معلوم نہ ہو کہ تمہارے دھرم کے عقیدے کیا ہیں اور تمہاری اصلیت کیا ہے ۔

لہٰذا اس سے ثابت ہوا کہ تم لوگ تقیہ پرست ، دجالی کاذب ہو جو کہ عقائد میں جھوٹ بولنے کو عین دین سمجھتے ہو اور اپنے روافض اور قادیانی بھائیوں کی پیروی میں پوری طرح سے مگن ہو۔ سب سے تم نے کچھ نہ کچھ حصہ حاصل کیا ہے۔ جب سنیوں میں تم نجدی آتے ہو تو وہابی کی جگہ دیوبندی بن کر سنیوں کے صوفی عقیدوں کو تباہ کرنے کا وہابی ابلیسی کام سرانجام دیتےہو۔

اہم بات؛

تمہاری اسی تاریخ المکہ مکرمہ جلد اول میں تم نے بڑی عیاری مکاری کے ساتھ سنیوں کو برٹش کا حامی دکھانے کی کوشش کی ہے حالانکہ اصلی تاریخ اس کے بالکل الٹ ہے۔ وہ برٹش ہی تھے جنہوں نےتم نجدیوں سے معاہدہ کر کے فلسطین ہتھیا لیا تھا اور تم کوابن سعود کی امت سے غداری کرنے کی کاوش میں نجدی عرب کی حکومت دے دی گئی جو کہ آج بھی مقبوضہ حجاز میں واقع ہے اور اپنے شر کو ان کتابوں کے ذریعے پوری طرح پھیلارہی ہے۔ تمہارا یہ لکھنا کہ اس عالمی جنگ میں ابن سعود نے نہ تو کسی کا تعاون کیا اور نہ ہی مخالفت ۔ اگرچہ اس پالیسی سے فائدہ انگریز ہی کو پہنچا۔ یہ لکھنا ثابت کرتا ہے کہ تم لوگ گواہی دے رہے ہو کہ انگریز کو فائدہ تم نجدیوں نے پہنچایا تھا۔ خلافتِ عثمانیہ جو جیسی بھی تھی لیکن ایک آخری چٹان تھی سامریت ِ مغرب کے راستے میں وہ تم لوگوں کی غداری کے جھٹکوں سے ٹوٹ گئی۔ تمہارا یہ لکھنا بھی ادھورا سچ ہے کیونکہ تم نے عالمی جنگ میں باقائدہ صیہونیوں کی مدد کی تھی جسکی وجہ سے ہی برٹش نے تمہاری طرف لارنس آف عربیہ کو بھیجا تھا جس کو آج دنیا ہمفرے کے اعترافات کے نام سے جانتی ہے لہٰذا اپنی کتابوں سے ہی تم مکار لوگ آشکار ہورہے ہو۔ نیز اسی صفحہ پر تم لوگوں نے دیوبند کا بھی ذکر کیا اور یہ ثابت کرنے کی ناکام کوشش کی کہ جیسے حجاز والے انگریزوں کے حامی تھے اور انہوں نے تم نجدیوں کے خلاف جب علمائے حجاز نے فتوے دیے جہاد کے تو تمہارے ہی ہندوستانی دیوبندی بھائیوں نے انکار کردیا کہ ہم نجدیوں کے خلاف جہاد کی حمایت نہیں کرتے۔ اور اس پر تم نے بڑا خراج تحسین بھی پیش کیا ہے۔ حالانکہ حقیقت یہ ہے کہ نہ صرف علمائے حجاز بلکہ علمائے اسلام نے تمہارے خلاف جہاد کا فتویٰ دیا تھا کیونکہ تم نے سلطنت عثمانیہ کی آخری مسلمان خلافت کو تباہ کرنے میں انگریز کی دامے درمے قدمے سخنے مدد کی تھی ۔ مگر یہ دیوبندی خبیث جو کہ آج حنفی کے بھیس میں چھپے ہوئے ہیں اور مسلمانوں کو دھوکا دے رہے ہیں یہ وہ خبیث ہیں جو یہاں پاکستان کی ٹیکسٹ بکس میں خود کو خلافت تحریک کا بانی بتاتے ہیں حالانکہ ان کے محمودالحسن دیوبندی ودیگر جن کا نام تم نے اسی صفحہ پر آخر میں دے رکھا ہے یہ سب تو تمہارے ہی بھائی بند تھے ۔ اسی لیئے آج تمہاری ہی کتاب سے ثابت ہوگیا کہ خلافت تحریک کے متعلق جو کچھ دیوبندی کہتےہیں وہ ایک جھوٹ کا پلند ہ ہے ۔ بکواس ہے افتراء ہے اور دوسرے کی پگڑی اپنے سر رکھنے کی ایک بھونڈی کوشش ہے۔ میرے الفاظ تلخ ہوں گے کیونکہ ہم تم لوگوں کی اصلیتوں کو تمہاری ہی کتابوں سے آشکار کریں گے۔

یعنی ثابت ہوا کہ جن عقائد کی بنا پر تم ہم سنی صوفیوں کو کافر مشرک بدعتی بکتے رہے ہو، تم بقول تمہاری اس کتاب کے خود انہیں عقیدوں کو عین اسلام سمجھتے ہو ۔ لہٰذا چلو شاباش دوبارہ سے تجدید ِ اسلام کرو اور توبہ کرو نیز اپنی محمدی ٹیمپلز کو تباہ کرو کیونکہ یہ مساجدِ ضرار ہیں نہ کہ مزارات کو۔ اور اس کے علاوہ امت سے غداری کرنے اور کذب بیانی کرنے پر معافیاں بھی مانگو اور آخری دم تک بجائے اپنی قابلیت جھاڑنے کے چپ چاپ بیٹھے کر اسلام ہم سنی صوفی بریلویوں سے سیکھتے رہو۔ اسی میں تمہاری بقا ہے۔

از بقلم خود ۔ ضرب حق

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s