Tag Archives: the powers which are gifted to them by Almighty

Kinds of Karamat for Saints by Almighty [Ar/Ur]

حضرت سیدنا علامہ تاج الدین ابونصر عبدالوہاب بن علی السبکی رحمتہ اللہ تعالیٰ علیہ نے طبقات الکبریٰ میں (محسوس ظاہری) کرامت کی پچیس اقسام تفسیل کے ساتھ بیان فرمائی ہیں، یہاں ان کا خلاصہ بیان کیا جاتا ہے:
۱۔ مردوں کو زندہ کرنا
۲۔ مردوں سے باتیں کرنا
۳۔ دریا کا پھٹ جانا، سوکھ جانا اور پانی پر چلنا
۴۔ کسی شے کی اصل ہی کو تبدیل کردینا۔
۵۔ زمین کا لپٹ کر فاصلہ مختصر کردینا۔
۶۔ جمادات و حیوانات کا ہمکلام ہونا۔
۷۔ امراض کا دور ہونا۔
۸۔ حیوانات کا تابع فرمان ہونا۔
۹۔ زمانے اور وقت کا سکڑ جانا اور محدود ہوجانا یا
۱۰۔ ان کا پھیل جانا
۱۱۔ دعا کا شرفِ قبولیت پانا
۱۲۔ زبان کا بات کرنے سے رک جانا یا کھل جانا۔
۱۳۔ انتہائی نفرت کرنے والے دلوں کو اپنی جانب مائل کرلینا۔
۱۴۔ بعض غیوب کی خبر دے دینا یا کشف ہوجانا۔
۱۵۔ عرصہ دراز تک کھائے پیئے بغیر رہنا۔
۱۶۔ تصرف کا حاصل ہونا۔
۱۷۔ زیادہ کھانا کھانے پر قدرت ہونا۔
۱۸۔ حرام کھانے سے محفوظ رہنا۔
۱۹۔ دور دراز مقام کا مشاہدہ کرنا۔
۲۰۔ بعض اولیاٗ عظام کو ایسی ہییت و جلال عطا ہونا جسے دیکھنے سے انسان کی موت واقع ہوجائے۔
۲۱۔ اللہ عزوجل کی طرف سے کفایت وحمایت کا حاصل ہونا یوں کہ اگر کوئی اولیائے کرام سے شر کا ارادہ کرے تو اللہ جل وشانہ اسکو خیر سے تبدیل فرمادے۔
۲۲۔ مختلف شکلوں اور صورتوں کو اختیار کرلینا۔
۲۳۔ اللہ کا انہیں زمینی ذخیروں پر آگاہ فرما دینا۔
۲۴۔ قلیل وقت میں کثیر تصانیف لکھ لینا۔
۲۵۔ زہر اور ہلاکت خیز چیزوں کا اثر نہ ہونا۔
حضرت سیدنا علامہ تاج الدین سبکی علیہ الرحمتہ القوی یہ اقسام بیان فرمانے کے بعد کہتے ہیں؛۔ میرے گمان کے مطابق کرامت کی اقسام ۱۰۰ سے بھی زیادہ ہیں اور ہم نے جو ۲۵ اقسام بیان کی ہیں ان میں سے ہرایک کے تحت کثیر احادیث و واقعات اور حکایات و روایات منقول ہیں۔
ریفرینس: جامع کرامات الاولیاٗ۔ از شیخ الامام یوسف بن اسمٰعیل النبہانی علیہ الرحمۃ الرضوان۔ جز ۱۔ مقدمۃ الکتاب؛ المطلب الثانی فی انواع الکرامات۔ صفحات ۴۸ تا ۵۲ مرکز اھل سنت برکاتِ رضا فوربند گجرات ہند۔۔ فیضان کمالاتِ اولیا ص ۵۱،۵۲ المدینۃ العلمیۃ دعوت اسلامی پاکستان کراچی

 

Advertisements